بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 26 مئی 2019 ء

دارالافتاء

 

شادی شدہ عورت کا فون پر ماموں سے باتیں کرنا


سوال

اگر کوئی شادی شدہ عورت اپنے ماموں کے ساتھ فون پر دل کی راز کی باتیں کرتے ہیں تو اس کے بارے شریعت کا کیا حکم ہے اور پردہ کے بارے میں کیا حکم ہے؟

جواب

اگر کوئی شادی شدہ عورت فون پر اپنے ماموں سے شوہر کی راز کی بات کرتی ہے یا اس طرح باتیں کرتی ہے جس سے شوہر کو اذیت ہوتی ہے تو اس کا یہ فعل درست نہیں اور شوہر کو اس کو منع کرنے کا حق حاصل ہے۔  ماموں سےاگر حقیقی ماموں مراد ہیں تو حقیقی ماموں محرم ہوتے ہیں اور ان سے پردہ کرنے کا حکم نہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144007200282

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں