بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 ربیع الثانی 1440ھ- 13 دسمبر 2018 ء

دارالافتاء

 

سورت ملک نمازِ عشاء  کے بعد پڑھنی  چاہیے یا سونے کے وقت؟


سوال

پوچھنا یہ تھا کہ سورت ملک نمازِ عشاء  کے بعد پڑھنی  چاہیے یا سونے کے وقت پرھنی چاہیے؟

جواب

دوںوں اوقات میں پڑھی جاسکتی ہے ، رات کے وقت اس کے پڑھنے کے جو فضائل ہیں وہ ان دونوں اوقات میں سے کسی میں بھی پڑھنے سے حاصل ہو جائیں گے۔

المعجم الكبير للطبراني (8/ 37، بترقيم الشاملة آليا)
"عن ابن مسعود قال:"يؤتى الرجل في قبره، فيؤتى رجلاه، فيقولان: ليس لكم على ما قبلنا من سبيل، كان يقرأ علينا سورة الملك، ثم يؤتى جوفه، فيقول: ليس لكم علي سبيل، قد كان وعى في سورة الملك، ثم يؤتى من رأسه، فيقول: ليس لكم على ما قبلي سبيل، كان يقرأ في سورة الملك". قال عبد الله:"فهي المانعة تمنع عذاب القبر، وهي في التوراة، هذه سورة الملك من قرأها في ليلة أكثر وأطيب"
. فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909202365


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں