بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 18 ستمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

سجدہ تلاوت کی مسنون نیت کیا ہے؟


سوال

سجدہ تلاوت کی مسنون نیت کیا ہے؟

جواب

نیت دل کے ارادے کا نام ہے، زبان سے نیت پر تلفظ کرنا ضروری نہیں ہوتا، چناں چہ سجدہ تلاوت کرتے وقت دل میں یہ دھیان رکھنا کافی ہے کہ میں سجدہ تلاوت ادا کر رہا ہوں۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (2/ 106):

"(بشروط الصلاة) المتقدمة (خلا التحريمة) ونية التعيين.

 (قوله: ونية التعيين) أي تعيين أنها سجدة آية، كذا في النهر عن القنية، وأما تعيين كونها عن التلاوة فشرط كما تقدم في بحث النية من شروط الصلاة إلا إذا كانت في الصلاة وسجدها فوراً كما علمته".فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008201154

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے