بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 محرم 1440ھ- 20 ستمبر 2018 ء

دارالافتاء

 

زکاۃ ادا کرنے کی ترتیب


سوال

 کیا زکاۃ سال میں ایک دفعہ ہی دی جا سکتی ہے یا زکاۃ کی رقم بارہ مہینوں پہ تقسیم کر کے ہر ماہ بھی دی جا سکتی ہے؟

 

جواب

سال پورا ہونے کے بعد جس قدر جلد ہو زکاۃ ادا کردی جائے (خواہ  یک مشت ادا کی جائے یا قسطوں میں، بہرصورت جس قدر جلدی ہوسکے زکاۃ کا فریضہ ادا کیا جائے) ، البتہ سہولت کےلیے  اگر سال پورا ہونے سے پہلے پہلے ہر ماہ تھوڑی تھوڑی زکاۃ ادا کرنا چاہیں تو کرسکتے ہیں۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143904200068


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں