بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 جولائی 2019 ء

دارالافتاء

 

ریال خرید کر جب اس کا ریٹ بڑھ جائے تب فروخت کرنا


سوال

ایک آدمی نے ریال خرید کر جب اس کا  ریٹ بڑھ گیا، فروخت کیا۔ کیا یہ ٹھیک ہے؟

جواب

جی! یہ جائز ہے، اور اس سے حاصل ہونے والا نفع جو کہ درحقیقت ریال کی قیمت میں اضافہ ہے، حلال ہے۔ البتہ ریال اور کرنسی کی خرید و فروخت چوں کہ بیعِ صرف ہے، اس لیے بیعِ صرف کی دیگر شرائط (مثلاً: مجلسِ عقد میں عوضین پر قبضہ) کا پایا جانا ضروری ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010200434

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے