بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 22 ستمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

ربیعان نام رکھنا


سوال

’’ربیعان‘‘  نام کا مطلب کیا ہے؟ اور کیا یہ نام رکھا جا سکتا ہے؟

جواب

’’ربیع‘‘  کے مختلف معنی آتے ہیں:  موسم بہار ( سردی اور گرمی کے درمیان کا موسم ) ( 2 ) ماہ ربیع اول وربیع ثانی ( 3 ) موسم بہار کی بارش ( 4 ) چھوٹی نہر ( 5 ) سر سبز پودے وغیرہ ۔

’’ربیعان ‘‘  کامعنی ہوسکتا ہے دو موسم بہار، یا دو نہریں یا دونوں مہینے۔اور اگر اس میں الف نون زائد ہوں اور اصل مادہ ’’ربیع‘‘  ہو تو اس کامطلب اوپر گزرچکا ہے۔

بہتر یہ ہے کہ اس کے بجائے انبیاء اور صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کے  نام یا کوئی اچھے معنی والا نام  رکھیں۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144012200622

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے