بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 26 مئی 2019 ء

دارالافتاء

 

حمل سے بچنے کے لیے انجیکشن لگانا


سوال

 میرا ایک دوست ہے سعودی عرب میں کام کرتا ہے، ابھی چھٹی سے آیا ہے، اس نے اپنی بیوی کوبچے رکوانے والاانجگشن لگایاتھا تو اس میں گناہ تو نہیں ہے؟ اس کی 2 سال کی  بچی ہے، ابھی جتنا جلدی اس کاجواب ہو جائے تو ممنون رہوں گا!

جواب

صورتِ مسئولہ میں عارضی طور پر حمل سے بچنے کے لیے بیوی کی اجازت سے عارضی اسباب اختیار کیے جا سکتے ہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004201014

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں