بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 21 جولائی 2019 ء

دارالافتاء

 

'' حسین '' نام رکھنا


سوال

میں نے اپنے بیٹے کانام "محمدحسین" رکھا ہے؛ کیوں کہ یہ ہمارے نبی ﷺکے نواسے کا نام تھا،مجھے کسی نے کہاکہ اتنا بڑا(بھاری)نام نہیں رکھنا چاہیے۔ آپ برائے مہربانی مجھے بتائیں کہ یہی ٹھیک ہے یا تبدیل کردیں؟

جواب

''حسین''سرکارِ دوعالم ﷺ کے محبوب نواسے کااسم گرامی ہے،صحابہ کرام علیہم الرضوان اور انبیاءِ عظام علیہم الصلوات والتسلیمات کے ناموں میں سے کوئی نام منتخب کرکے رکھنا باعثِ سعادت اور برکت ہے؛ اس لیے مذکورہ  منتخب نام ہی بہتراور افضل ہے، اسے تبدیل کرنے کی ضرورت نہیں۔''حسین ''نام سے متعلق یہ نظریہ رکھنا کہ "یہ بھاری نام ہے، لہذا تبدیل کردیاجائے" درست نہیں ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909202348

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے