بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

23 شوال 1440ھ- 27 جون 2019 ء

دارالافتاء

 

تالاب میں غوطہ لگانے کی وجہ سے پانی حلق میں جانے کا حکم


سوال

اگررمضان میں روزے کی حالت میں کوئی شخص تالاب میں غوطہ لگائے اور پانی پیٹ میں گیا اب اس شخص پر کفارہ ہے یا قضا؟

جواب

اگر تالاب میں غوطہ لگاتے ہوئے غلطی سے پانی حلق سے نیچے اتر گیا تو روزہ فاسد ہو جائے گا اور اس کی قضا لازم ہوگی، کفارہ لازم نہیں ہوگا۔ البتہ اگر جان بوجھ کر پانی حلق سے نیچے اتارا ہو تو کفارہ بھی لازم ہوگا۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200470

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے