بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 جولائی 2019 ء

دارالافتاء

 

بونس آدھا دینا


سوال

میں جہاں کام کرتاہوں وہاں ہماری سیلری فکسڈ ہے، کمیشن نہیں ملتا، میری 18000 تنخواہ ہے، لیکن بونس آدھا دیا ہے10000،  سال بھر کی محنت کے بعد آدھا بونس دیا ہے، وہ کہتے ہیں کہ دینا ضروری نہیں ہے، کیا یہ درست ہے؟

جواب

تنخواہ کے علاوہ بونس کا دینا شرعاً لازم اور ضروری نہیں، تاہم مارکیٹ کے دستور کے موافق بونس مکمل دینا حسنِ اخلاق کا تقاضا ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200156

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے