بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

19 ذو الحجة 1440ھ- 21 اگست 2019 ء

دارالافتاء

 

بدکردار والدہ سے قطع تعلقی کا حکم


سوال

اگر کوئی شخص اپنی والدہ کو غیر مرد کے ساتھ دیکھے ،ایسی صورت میں اولاد کے لیے کیا حکم ہے؟انہیں کیا حق حاصل ہے؟
 

جواب

مذکورہ صورت میں اولاد کو چاہیے کہ اولاً اپنی والدہ کو سمجھانے کی کوشش کرے اور مذکورہ فعلِ بد سے باز رکھنے اور روکنے کی کوشش کرے ،اگر کسی طرح بھی کامیابی حاصل نہ ہوسکے اور والدہ اپنے غلط کردار سے باز نہ آئے تو ان سے قطع تعلق کرلیناچاہیے۔(آپ کے مسائل اور ان کا حل ،جلد ہشتم ، ص؛547،ط:مکتبہ لدھیانوی)فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143905200002

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے