بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 27 مئی 2019 ء

دارالافتاء

 

ایک تولہ سونا اور سو، پچاس روپے ہوں، زکوۃ فرض ہوگی؟


سوال

میری بیوی کے پاس ایک تولہ سونا ہے، چاندی بالکل نہیں ہے، جب کہ کیش رقم اس کے پاس سو یا پچاس روپے ہوتے ہی ہیں، کیا اس پر زکوۃ فرض ہے؟

جواب

مذکورہ صورت میں اگر یہ پچاس سو روپے ضروریات میں صرف کے علاوہ ہوں اور علیحدہ سے جمع شدہ رکھےگئےہوں، تو حنفی متون کے اطلاق کے مطابق آپ کی بیوی پر زکوۃ فرض ہے۔اوراگر ضرورت کے لیے ہوں یا زکوۃ کی تاریخ آنے سے پہلے پر خرچ ہوجاتےہوں تو آپ پر زکوۃ نہیں ہے۔


فتوی نمبر : 143511200019

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں