بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 25 مئی 2019 ء

دارالافتاء

 

اگر روزے کی حالت میں غسل کیا تو کیا افطار کے بعد غرغرہ کرنا ہوگا؟


سوال

روزے کی حالت میں احتلام ہو جائے تو وضو کی طرح کلی کرنی ہے اور ناک میں پانی ڈالنا ہے تو کیا روزے کے بعد غرغرہ کرنا ہے یا نہیں؟

جواب

اگر روزے کی حالت میں احتلام ہو جائے تو غسل کرتے ہوئے غرغرہ نہیں کرنا چاہیے، اسی طرح ناک میں پانی ڈالتے ہوئے بھی احتیاط کرنی چاہیے کہ پانی نرم ہڈی سے اوپر نہ چڑھ جائے، کیوں کہ وہاں سے حلق میں بھی اتر سکتاہے اور دماغ تک بھی پہنچ سکتاہے۔  اور روزے کی حالت میں کیا ہوا غسل ہی کافی ہو گا،  روزہ افطار کرنے کے بعد غرغرہ اور ناک میں اچھی طرح پانی ڈالنے کی ضرورت نہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200315

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں