بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو الحجة 1440ھ- 19 اگست 2019 ء

دارالافتاء

 

'' اگر تجھےاس گھرمیں رہنے دوں تومیرےاوپرماں کادودھ حرام  ہے '' کہنے کا حکم


سوال

ایک  بندے نےاپنی بیوی کوبولاکہ میں اگر تجھےاس گھرمیں رہنے دوں تومیرےاوپرماں کادودھ حرام  ہے ،اب اگر اس کی نیت طلاق کی ہو توطلاق واقع ہوگی یانہیں؟

جواب

مذکورہ الفاظ سے کوئی طلاق واقع نہیں ہوتی، نیت کے باجود بھی یہ الفاظ طلاق کے لیے استعمال ہونے والے الفاظ کنایہ میں شامل نہیں ہیں۔البتہ آئندہ اس طرح کی گفتگوسے اجتناب کیاجائے ۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143907200091

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے