بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو الحجة 1440ھ- 19 اگست 2019 ء

دارالافتاء

 

اپنی بہو کی ماں (سمدہن) سے شادی کرنا


سوال

عامر اور زینب میاں بیوی ہیں ، اوران کی بیٹی صبیحہ ہے۔

فضیل اور عائشہ میاں بیوی ہیں، ان کا بیٹا ارسلان ہے۔

عامر اور عائشہ فوت ہوگئے ۔ اور ارسلان اور صبیحہ کی شادی ہوگئی:

  1. کیا  فضیل اور زینب کی شادی ہوسکتی ہے؟
  2. اگرپہلے فضیل اور زینب کی شادی ہوچکی ہو تو کیا بعد میں  ارسلان اور صبیحہ کی شادی ہوسکتی ہے؟

جواب

پہلی صورت میں فضیل اپنی بہو کی ماں سے شادی کررہا ہے،اور یہ جائز ہے۔

دوسری صورت میں ارسلان اپنی سوتیلی ماں کی بیٹی سے شادی کررہا ہے، جو اس کی بہن نہیں، یہ  بھی جائز ہے۔

’’لا بأس بأن يتزوج الرجل امرأة، ويتزوج ابنه ابنتها أو أمها، كذا في محيط السرخسي‘‘. فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144003200157

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے