بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 اکتوبر 2019 ء

دارالافتاء

 

آفس کا کام کرکے زیادہ رقم کا بل بنانا


سوال

آفس کا کام میں اپنے کزن کی دکان سے کرواتا ہوں، کیا میں اس میں اپنا کمیشن رکھ سکتا ہوں؟ میرے کزن کو یہ بات معلوم ہے کہ میں بل زیادہ کا بنا کر دیتا ہوں!

جواب

آفس والے اگر آپ سے کوئی کام کرنے کا کہیں  تو آپ   اس متعلقہ کام میں ان کے وکیل ہیں ، لہذا اس کام میں جتنا خرچہ آئے یا جتنی رقم میں وہ  کام ہوجائے اتنی ہی رقم  آپ کمپنی سے لے سکتے ہیں ، کام کم رقم میں کرواکر زیادہ رقم کا بل بنانا خیانت اور دھوکا دہی ہے ،  جو ناجائز ہے،  اگر آپ کا کزن یہ بات جانتے ہوئے بھی آپ کے لیے زیادہ رقم کا بل بناتا ہے تو وہ بھی گناہ کے کام میں تعاون کی وجہ سے گناہ گار ہوگا۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200552

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے